Education In Pakistan

Papers, Notes, Books & Help For Students

UPDATED EDUCATIONAL NEWS INTERVIEW HELP FOR ALL JOBS ONLINE BOOKS SCHOLARSHIPS AVAILABLE INTERNSHIP JOBS

Tag: اعلیٰ تعلیم کے لیے قرض حسنہ سکیم

اعلیٰ تعلیم کے لیے قرض حسنہ سکیم

اعلیٰ تعلیم کے لیے قرض حسنہ سکیم

اعلیٰ تعلیم کے لیے قرض حسنہ سکیم کا اعلان

ضرورت مند طلبابرسرروزگار ہونے کے بعد یہ قرضہ بلاسود قسطوں میں حکومت کو واپس کرینگے ،میڈیکل اور انجینئرنگ کیلئے انٹری ٹیسٹ اگلے تعلیمی سیشن میں بھی جاری رہیگا نجی سکولوں میں مستحق ذہین طلبا کی مفت تعلیم کے قانون پر عملدرآمد کا طریقہ کار وضع،دو لاکھ سے زائد بچے مستفید ہونگے :رانا مشہودکی زیرصدارت اجلاس میں سفارشات تیارلاہور)صوبائی محکمہ تعلیم نے پنجاب فری اینڈ کمپلسری ایجوکیشن آرڈیننس مجریہ 2014 کے سیکشن 13(بی) کے تحت صوبے میں اچھی شہرت اور کامیاب ساکھ کے حامل تمام پرائیویٹ سکولوں میں کم وسائل رکھنے والے خاندانوں کے ذہین بچوں کو مفت تعلیمی سہولتیں دینے کے لیے مختص 10فیصد کوٹہ پر موثر عمل درآمد کا طریقہ کار وضع کرلیا جس سے دو لاکھ سے زیادہ غریب بچے مستفید ہوں گے ۔ وزیر تعلیم پنجاب رانا مشہودکی صدارت میں منعقدہ اجلاس میں اس حوالے سے سفارشات تیار کی گئی ہیں جنہیں 17سے زائد متعلقہ آرگنائزیشنز سے مشاورت کے بعدوزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی جانب سے حتمی منظوری کے بعد نافذ کردیا جائے گا۔محکمہ تعلیم کی سفارشات کے مطابق پنجاب میں نرسری سے لے کر دسویں جماعت تک ہر مرحلے میں مستحق بچوں کے لیے داخلے کا 10فیصد کوٹہ یقینی بنایا جائے گا۔ پرائیویٹ سکولوں میں داخلہ لینے کے خواہشمند جن بچوں کے والدین کی مجموعی آمدنی 25ہزار ماہانہ سے کم ہو ، وہ اپنے آجراور متعلقہ تحصیل دار سے آمدن کا تصدیقی سرٹیفکیٹ حاصل کرنے کے بعد اپنے قرب وجوار میں واقع پرائیویٹ سکولوں میں 10فیصد کوٹہ کے تحت مفت تعلیم کے لیے داخلہ فارم جمع کراسکیں گے ۔اس کوٹہ میں ایسے بچوں کو داخلہ ملے گا جوبچوں کے لرننگ لیول جانچنے کے لیے سکول میں رائج انٹری سسٹم کے مطابق میرٹ پر پورا اترتے ہوں۔نجی شعبے کے تعلیمی ادارے ترجیحی طور پرعلاقے کے یتیم بچوں ، درجہ چہارم کے سرکاری ملازمین کے بچوں ، دوران ملازمت وفات پاجانے والے سرکاری ملازمین کے بچوں اور بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام میں رجسٹرڈ مستحق خاندانوں کے بچوں کو داخلہ دیں گے اور دس فیصد کوٹہ کی باقی نشستیں کم آمدنی والے گھرانوں کے بچوں کو میرٹ پر دی جائیں گی۔ جن پرائیویٹ سکولوں میں مخلوط طرز تعلیم رائج ہے ، وہاں 50فیصد لڑکوں اور 50فیصد لڑکیوں کو 10فیصد کم وسیلہ کوٹے کے تحت برابر تعداد میں داخلہ دیا جائے گا۔ اجلاس میں سفارش کی گئی کہ ہر پرائیویٹ سکول اس کوٹہ کے تحت مفت تعلیم پانے والے بچوں کی لرننگ آئوٹ کم کا تعین کرنے کے لیے سالانہ سکریننگ پروسیجراپنائے گا جس کے تحت کوالٹی ایشورنس کی جائے گی اور سکول انتظامیہ اس بارے میں تمام ریکارڈ سے متعلقہ ضلع کے ای ڈی او ایجوکیشن کو مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کے توسط سے باقاعدہ آگاہ رکھے گی۔ وزیرتعلیم نے اس موقع پر ضرورت مند مگر ذہین طلبہ و طالبات کے لیے تعلیمی وظائف میں مزید وسعت لانے کے لیے ایک خصوصی کمیٹی تشکیل دینے اوراعلیٰ تعلیم کے لیے قرض حسنہ سکیم کے اجرا کا اعلان کیا۔ضرورت مند طلبابرسرروزگار ہونے کے بعد یہ قرضہ بلاسود قسطوں میں حکومت کو واپس کریں گے ۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیاکہ میڈیکل کالجوں اور انجینئرنگ یونیورسٹیوں میں داخلے کے لیے انٹری ٹیسٹ لینے کا عمل اگلے تعلیمی سیشن میں بھی جاری رہے گا اور اس حوالے سے انٹری ٹیسٹ کے فوائد اور مضمرات پرپبلک فورمز سے مزید مشاورت کے بعد حتمی فیصلہ وزیراعلیٰ پنجاب کریں گے

Education In Pakistan © 2016