Education In Pakistan

Papers, Notes, Books & Help For Students

UPDATED EDUCATIONAL NEWS INTERVIEW HELP FOR ALL JOBS ONLINE BOOKS SCHOLARSHIPS AVAILABLE INTERNSHIP JOBS

Day: June 13, 2016

Punjab Budget Detail 2016 پنجاب کا 1681 ارب روپے کا بجٹ پیش، تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافہ

Punjab Budget Detail 2016 پنجاب کا 1681 ارب روپے کا بجٹ پیش، تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافہ

آئندہ مالی سال کےدوران 45 ہزاراضافی پرائمری اساتذہ فراہم کیےجائیں گے،
اسکول ایجوکیشن کےلیے 56 ارب 76 کروڑروپےمختص
اسکول ایجوکیشن کیلئےمجموعی طورپر 256 ارب روپےرکھےگئے
– 4 لاکھ طالبعلموں کولیپ ٹاپ دینے کیلئے 4 ارب روپےمختص
– ضلعی سطح پراسکول ایجوکیشن کےلیے 169 ارب روپےمختص

پنجاب کا 1681 ارب روپے کا بجٹ پیش، تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافہ
اپوزیشن کے شور شرابے میں پنجاب کا ایک ہزار چھ سو اکیاسی ارب روپے کا بجٹ پیش۔ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافہ۔ مزدور کی کم سے کم اجرت 14 ہزار مقرر۔
پنجاب اسمبلی میں بجٹ دو ہزار سولہ اور سترہ کا اجلاس اسپیکر رانا اقبال کی زیر صدارت ہوا۔ وزیر خزانہ پنجاب عائشہ غوث بخش نے بجٹ تقریر میں کہا صافی پانی کی فراہمی کیلئے گزشتہ سال کی نسبت 88 فیصد زیادہ بجٹ مختص کیا گیا ہے اور شعبہ صحت کیلئے 62 فیصد سے زائد کا بجٹ مختص کیا گیا ہے۔ وزیر خزانہ نے کہا ترقیاتی منصوبوں کی بدولت 7 لاکھ ملازمتوں کے مواقع پیدا ہوں گے اور آئندہ سال ترقیاتی منصوبوں کیلئے 550 ارب رکھے گئے ہیں۔ بجٹ دستاویز کے مطابق تعلیم کیلئے مجموعی طور پر 312 ارب 80 کروڑ روپے اور صحت کیلئے بجٹ میں 150 ارب روپے مختص کئے گئے۔ پولیس کیلئے 100 ارب روپے آئندہ بجٹ میں مختص۔ بجٹ خسارہ پورا کرنے کیلئے 361 ارب روپے قرض لیا جائے گا۔ تنخواہوں میں اضافے سے اخراجات میں 13 ارب روپے کا اضافہ ہو گا۔ پنشن کی شرح میں اضافے سے 24 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑ گیا۔ صوبے میں 23 ہزار 618 نئی اسامیاں پیدا کی جائیں گی۔ جنوبی پنجاب میں چھٹی سے دسویں جماعت کی لڑکیوں کیلئے ایک ہزار روپے ماہانہ وظیفہ دیا جائے گا ۔ مری میں 100 بیڈ کا زچہ و بچہ اسپتال قائم کیا جائے گا۔ نکاسی آب اور اخراج آب کیلئے 57.4 ارب روپے مختص۔ بجٹ میں زراعت کیلئے 52.3 ارب روپے مختص اور لائیو اسٹاک کے شعبے کیلئے 13.6 ارب روپے رکھے گئے۔ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافہ جبکہ مزدور کی کم سے کم اجرت 14 ہزار مقرر کی گئی۔

پنجاب اسمبلی کا بجٹ اجلاس آج سہ پہر چار بجے ہوگا

پنجاب اسمبلی کا بجٹ اجلاس آج سہ پہر چار بجے ہوگا
پنجاب اسمبلی کا بجٹ اجلاس آج سہ پہر چار بجے ہوگا، وزیر خزانہ پنجاب عائشہ غوث پاشا بجٹ پیش کریں گی ۔

پنجاب کے بجٹ کا کل حجم ایک ہزار650ارب روپےسے زائد ہوگا ، گاڑیوں پر نئے ٹیکسزلگائےجانےکا بھی امکان ہے، جیو نیوز نے بجٹ دستاویزات کی کاپی حاصل کر لی۔ بجٹ آج پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔

وزارتِ خزانہ پنجاب کےذرائع کےمطابق صوبائی بجٹ5 سو 50 ارب روپے سے زائد کاترقیاتی بجٹ ہوگا ،جس میں142 نئے ترقیاتی منصوبے شامل کئے جائیں گے ، بعض اشیاءپر نئے ٹیکسزسمیت 10 نئی سروسز پرٹیکس عائدکرنے کی تجویزہے۔

1500 سے 2000 سی سی تک کی گاڑیوں کے ٹیکس میں 2 سے 3 فیصد اضافہ متوقع ہے جبکہ پروفیشنل ٹیکس ، کنسلٹنٹ، اسپیشلسٹ اور ڈینٹل سرجن کے ٹیکسوں میں اضافہ کی تجویز ہے۔
تنخواہوں کی مدمیں 800 ارب ،مواصلات و تعمیرات کیلئے 250 ارب ،بیرونی سرمائے سے چلنے والے پراجیکٹس کے لیے 30 ارب روپے، صحت کیلئے 150ارب ،اورنج لائن میٹرو ٹرین اور سڑکوں کیلئے 100 ارب، توانائی کے لیے 18 ارب چالیس کروڑ، پنجاب پولیس کیلئے 94 ارب روپے اورصاف پانی پروگرام کیلئے 30ارب رکھنے کی تجویز ہے۔

کسان پیکج کیلئے 50 ارب،اربن ڈویلپمنٹ کے لیے 16 ارب،86 کروڑ 60 لاکھ روپے،زراعت کیلئے 12 ارب 21 کروڑ90 لاکھ اورکینال روڈ لاہور کی توسیع کیلئے 5 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز ہے۔

اسکولوں کی مخدوش عمارات کی تعمیر ومرمت کیلئے 9 ارب ، اسکول ایجوکیشن کیلئے 22 ارب 62 کروڑ ، ہائر ایجوکیشن کیلئے 13ارب 49 کروڑ،اسپیشل ایجوکیشن کیلئے90 کروڑ ،اسکولوں میں سہولتوں کی فراہمی کیلئے6 ارب روپےاور لیپ ٹاپ اسکیم کیلئے6 ارب روپےرکھنےکی تجویزہے۔

بجٹ میں 3لاکھ اساتذہ کی اپ گریڈیشن جبکہ 70ہزار نئے اساتذہ بھرتی کرنےکافیصلہ بھی کیا گیا ہے ،بجٹ دستاویز کے مطابق جاریہ اخراجات کا تخمینہ 1200 ارب روپے لگایا

Education In Pakistan © 2016